Posted in Ghazal

Ghazal 

​خاموش لب ہیں جھکی ہیں پلکیں 

دلوں میں الفت نئ نئ ہے 

ابھی تکلف ہے گفتگو میں

 ابھی محبت نئ نئ ہے 
ابھی نہ آۓ گی نیند تم کو

 ابھی نہ ہم کو سکوں ملے گا 

ابھی تودھڑکے گا دل زیادہ 

ابھی یہ چاہت نئ نئ ہے 
بہار کا آج پہلا دن ہے 

چلو چمن میں ٹہل کے آئیں

فضا میں خوشبو نئ نئ ہے

 گلوں میں رنگت نئ نئ ہے 
جو خاندانی رئیس ہیں وہ

 مزاج رکھتے ہیں نرم اپنا

تمھارا لہجہ بتا رہا ہے

 تمھاری دولت نئ نئ ہے
ذرا سا قدرت نے کیانوازا

کہ آکے بیٹھے ہو پہلی صف میں 

ابھی سے اڑنے لگے ہوا میں

 ابھی تو شہرت نئ نئ ہے۔۔۔

Advertisements

Author:

simplicity is mine.

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s