Posted in islamic

رمضان میں شیطان کہاں ہوتا ہے؟

رمضان میں شیطان کہاں چلا جاتا ہے ؟ بہت سی احادیث سے اس بات کا جواب ملتا ہے شیطان (ابلیس) کو رمضان کے آغاز سے ہی قید کر دیا جاتا ہے۔ حدیث میں ہے کہ حضرت ابو ہریرہ (رض) نے فرمایا کہ آپ ﷺ نے فرمایا کہ

“جب رمضان کا مہینہ شروع ہوتا ہے تو جنت کے دروازے کھول دیے جاتے ہیں۔ دوزخ کے دروازے بند کر دیے جاتے ہیں اور شیطان کو قید کر لیا جاتا ہے ( بخاری)

بہت سے لوگ یہ سوال کرتے ہیں کہ اگر شیطان رمضان میں بند ہوجاتا تو غلط کام رمضان میں کیوں ہوتے رہتے ہیں۔ اس کا سب سے آسان جواب یہ ہے کہ سال کے بقیہ دنوں میں ہمارا نفس شیطان کے زیر نگرانی کام کرتا ہے۔ رمضان میں شیطان تو بند ہوجاتا ہے مگر نفس ہمارے ساتھ ہوتا ہے۔ 11 مہینوں کی ٹریننگ ایک مہینے میں ختم نہیں ہوجاتی۔ اس لیے رمضان میں اپنے نفس کو قابو میں رکھنا زیادہ ضروری ہوتا ہے۔ جنت کے کھولے ہوئے دروازوں میں اپنے لیے جگہ بنانے کی زیادہ سے زیادہ کوشش کرنی چاہیے۔ 

Advertisements

Author:

simplicity is mine.

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s