Posted in urdu ghazal

کمی ذرا سی اگر فاصلے میں آ جائے

کمی ذرا سی اگر فاصلے میں آ جائے

وہ شخص پھر سے مرے رابطے میں آ جائے

اسے کرید رہا ہوں طرح طرح سے

کہ وہ جہت جہت سے مرے جائزے میں آ جائے

کمال جب ہے کہ سنورے وہ اپنے درپن میں

اور اس کا عکس مرے آئینے میں آ جائے

کیا ہے ترک- تعلق تو مڑ کے دیکھنا

کیا کہیں نہ فرق ترے فیصلے میں آ جائے

دماغ اہل- محبت کا ساتھ دیتا نہیں اسے کہو

کہ وہ دل کے کہے میں آ جائے

وہ میری راہ میں آنکھیں بچھائے بیٹھا ہو

یہ واقعہ بھی کبھی دیکھنے میں آ جائے

وہ ماہتاب- زمانہ ہے، لوگ کہتے ہیں

تو اس کا نور مرے شب کدے میں آ جائے

بس اک فراغ بچا ہے جنوں پسند

یہاں کہو کہ وہ بھی مرے قافلے میں آ جائے

Advertisements

Author:

simplicity is mine.

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.